افسانہ

امین کامل سند افسانہ ” قصاص”


ستارہ ژاو وارہ کارہ شیتن، توتہِ چھس نہ بوزن تگان زِ میانہِ ماجے تمن مارہ واتلن میون مول مارنک قصاص ہیژاو تہ کیا ہیژاو۔
کتھ چھیہ وری واد پرانۍ ییلہ ترہ ترہ گام ژھنڈتھ تہِ کانہہ پن ناون واجینۍ ٲس نہ میلان۔ سۅ تہِ بۅنہ کوٹ چہ جان دیدِ ہش یمۍ سنزہ کرامٲژ ونہِ تہِ اتھ سٲرۍ سے علاقس منز پھرنہ چھیہ یوان۔
دپان جان دید ٲس نہ تیژاہ وٲنسہِ۔ وۅں گوو رٍنۍ سندۍ بے وق مرنن ٲس پتھر پٲومژ۔ گرک خاندار تہ کُنے زینن ہار، بچٲر کشالہ کرۍ کرۍ ٲس تاوننۍ دۅہ کڈان۔ پیٹھہ اوسس کمبرس کم کاسہ ڈۅکھ تہِ ژامت۔
اکہ دۅہہ اوس سہ گرہ کیت زیُن اننہِ جنگل کھوتمت۔ تتہِ گوس ہیرہ کوٹہ کس شابہ ژکس سیتۍ کتھ تام پیٹھ کتھہ بکواس۔ سہ تہِ اوس زِنہِ مۅکھے تور کھوتمت۔ دۅشویو ترٲو اکھ اکس جپھ۔ اتھۍ منز دیتُس شابہ ژکن اجہلۍ پاٹھۍ دکہ۔ یہ آو اکس کُلۍ گۅنڈس سیتۍ ووکھہ پاٹھۍ ٹھاسنہ۔ ادہ تتی بروبد پھوٹس کلہ تہ شہلیوو۔
اتھ حٲدثس اوس واریاہ کال گومت زِ اکہ دۅہہ چلے کلانس منز شامنس ژیرۍ گیہ جان دیدِ برس ٹھسرارے۔ سۅ گیہ زۅلہ نندرِ ہشار۔ اڈے دٲر مژرتھ وچھِن زنۍ تارہ کلہ نلہ ژادرا ؤلتھ استادہ۔ امہ پرژھکھ کم با چھوہ؟ اورہ گیہ ژھۅپہ۔ کٲنسہِ اکۍ تہِ دیتُس نہ جواب۔
"کیا با زِ؟ خداے رٔچھنو کنن چھوا وۅگہ۔ تٍرِ ژھٹھ ہبا آیم۔”
"اسۍ ہہ دی چھہِ۔۔۔” اکس کھتۍ کہۍ تام یم لفظ زیوِ۔
"اسۍ کم با؟ ناو چھو نا زِ؟ اتہِ گیہ بییہ ژھۅپہ۔ جان دیدِ کھژ ژکھ ہش۔
"تخسیر۔ ژجوا بلایہ۔ زیوہ چھوا گری مشتھ گٲمژہ۔”
"اسۍ ہہ دی چھہ ہیرہ کوٹکۍ” اکۍ زنۍ وون کلے مژِ زیوِ۔ جان دیدِ ہند نیچو ستارہ زن نیو ملکو یہ ناو بوزتھ مس نندرِ تُلتھ۔
"کمے چھہِ؟” تمۍ پرژھ ماجہ۔
"یم ہا چھہِ ہیرہ کوٹکۍ” جان دیدِ وونس اندر کُن پھیرتھ۔
"ژھنۍ کھی بلایہ مارہ واتلن۔ مرۍ نکھی یس مرن آسیکھ” ستارن وونس شرارتہ ہوت۔
"پکو با، یہ کیا بہ تہِ وٲژس” جان دیدِ دیُتکھ دلاسہ۔
"نہ دی، اسی سیتۍ زن آیکھ۔ وتھ چھنا ناس تراس، پیٹھہ چھہِ شینہ مہۍ تہِ ییرن۔
"ادہ با چھہِ ییرن۔ اتھ چھما نوو دین، پکو، بہ تہِ وٲژس۔”
"نہ دی ینہ ژہ یکھ نہ” شابہ ژکنۍ نیچوۍ وونس "بلایہ لگوے۔”
"ہے میہ بلایہ۔ تہِ بنیا یمہ نہ۔ بہ تُلن اتھہ رچھہِ ستارہ سیتۍ، پکو ۔”
"اوہ، بہ دمکھ لوتین پوتین لژھج” امۍ سنز یہ کتھ بوز یمو نفرو تہِ۔ یہندِ گژھنہ پتہ ووتھ ستارہ ماجہ کن "موجی بابہ گویا مشتھے۔ ژہ گژھکھا یمن خونرن کور پن ناونہِ؟”
"گوبرہ بہ ٲسس خدایس منگان یم گژھۍ میہ تل لگنۍ، ادہ یژکالۍ سہی تہ لگۍ۔ گوبرہ وچھتھ نا یمن کِتھہ کنۍ چھہ پننۍ کرتوتن زیون گنڈ تہ بُتھین تمن کورمت۔ یہ چھا کم سزا یمن۔”
ہیرہ کوٹ تام اوس اتہِ پیٹھہ میل کھنڈ پاتھل تہ میل کھنڈ کھسونۍ ڈکھر۔ دۅن دۅہن ژھدہ روس رود پینہ کنۍ ٲس وتھ کنیمژ۔ پیٹھہ ٲس جان دیدکمبرہ کنۍ قدم تُلنس ہنا سُختی گژھان۔ ستارہ یُس مسا ژۅداہ وُہر آسہِ ہے اوسس لشہ گاش ہیتھ لرِ لور پکان۔
شابہ ژک نین ٲس نہ کانہہ پژھا زِ جان دید کیا ییہ۔ پنن کورمت اوسکھ اچھن تل۔ اماپوز یُتھے سۅ بالۍ تہ چھالۍ پکۍ پکۍ اور ژایہ، یمن زن بیوٹھ پٲر، زن گیا اکہ اکہ وٹسۍ۔ جان دیدِ ژیون یہ، سۅ ؤژھکھ "تہۍ کیہو زِ ہت تہ بت بہتھ۔ ژٹۍ وہ سۅخنا وۅخنا۔ تلۍ وہ بٲتھ۔ کتیو چھکھ نندہ بانے وۅلو معشوقہ میانے۔” اتھۍ سیتۍ اوسُن تہ پرژھنکھ "کتیو چھوہ یہ بژ؟” یہ ٲس نوشن کورین یی ونان۔ یمو نیہ یہ اندرمس کٹھس، ییتہ اہنز کور زیبہ ازارہ سیتۍ چرنگ ٲس دوان۔ اتہِ آسہ ہمسایہ زنانہ پونشہ کلہ تہ کوٹھۍ ملوِتھ بہتھ۔
"ژیہ کتھے پیٹھ ہول ہانگے تجمژ؟ پرسُن چھے تہ پرستہ۔ گۅڈہ ووتیا راتھ کیُتھے ہیرس تام۔ گاش ینس پژۍ زِ ہے۔”
"امس ہہ دی ووت شامہ پیٹھے اتھۍ حالس منز۔” شابہ ژک نہِ زنانہِ خۅرشہِ وونس ودونہِ چانٹہِ۔
"اہانی تہ میۍ ونیوسا رون کرُن” امہ پتہ پھیر زیبس کن "سہ زدہ مونڈ آسی گرِ پننہِ کھرۅکھ کڈان۔ژہ تھٲونکھ مالنہِ لمہ لمس۔” اتھۍ سیتۍ کورن پانۍ پانس سیتۍ اسناہ تہ وونن خۅرشہ کن "وُشن آب چھیے، انہِ یورۍ۔ مگر گۅڈہ دتم کانگرِ وشناہ۔ بتھۍ برۍ شہہ ہے مۅمنے یس۔ دگرس باگۍ کونے سوزتھم شیچھ کنہ دوپتھ وۅلا پانے نیرِ کھۅکھش کران۔ امۍ ہے چھے امس بژِ دۅیو اتھو کۅم کرمژ۔ ” یہ ؤنتھ کورن دم پھٹۍ ہیو اسناہ تہ لج بُتھ وشناونہِ۔
"ہیے تہۍ چھوے وارے؟” یہ پھیر ہمسایہ باین کن۔
"اہن دی وارے چھیہ۔ خدا تھٲوۍ نے ژیہ وارہ وتہِ۔”
"نتہ کیہے گژھیم”یہ پھیر بییس زنہِ کن "ژیہ چھیے تمس پنژرِ سہ شر وارے۔ وۅنۍ ہے آسہِ خدایس حوالہ بوڈ گومت۔”
"اہن دی ادہ کیا۔ اوخن صٲبس نشہ چھہ قرآن پرنہِ گژھان۔”
ستار، شابہ ژک تہ بییہ زہ تریہ ہمسایہ مرد ٲسۍ نیبرمس کٹھس منزسِتھ نہ بِتھ، تماکۍ چلماہ چلماہ بران تہ چیوان۔یم ٲسۍ اندرمہ کٹھہِ چہ سارے کتھہ بوزان۔بلکہ پریتھ اکھا اوس تورہ کسے کوس۔شابہ ژک اوس اندرۍ اندرۍ خدایس منگان کور گژھم وارہ وتہِ روزنۍ۔
جان دیدِ پٹھرٲوۍ اتھہ وتھہ تہ پِنہ نٲون، پننۍ ژھل ژھۅمب ورتٲوتھ زیبہ۔ مگر شرۍ نہ دژ چخ نہ کٔرن نرین زنگن کانہہ سۅسرایی۔ زیبہ نہِ ماجہ خۅرشہ دژ وچھس ژنڈ۔ "امس کیا دی گوم، امۍ کونہ دژ چخ؟”
"تخسیر” جان دیدِ کھژ درہ "وۅلتہ دیاوتن چخ۔ میہ کیا ٹھاک کورمسا؟”
"ماجی! امس کیہے گوم؟” زیبن کور واویلا۔
اپٲرمہ کٹھہِ یتھے یہ بوزکھ تمن سارنے گوو ژس تہ ہۅنگنہِ گٔیکھ اویزان۔ شابہ ژکس گوو وٹھن کوو، بتھس پھیرس زردی تہ اچھن پھٔٹس اشۍ گنڈ۔ امس گوو اندری زِ جان دیدِ کور زٲنتھ مٲنتھ شرس وٲرداتھ۔ امۍ ترٲو ستارس کن نظر۔ سہ وچھن اسونہِ ہۅنجہ تہ خۅش۔ امۍ مورۍ اتھہ۔ ستار اوس نژۍ نژۍ کریکہ یژھان دنہِ "ببا، ماجہ ہا ہیوت یمن خونرن چون انتقام۔ چورنکھ ہا شرس ہوٹ۔ زوس زو۔”
خۅرش ٲس شرۅکان زِ جان دید وژھس”ژیہ کتھے لٲگۍ تھم چنگہ پھیرۍ تراونۍ۔ نیرِ جل جل انہِ سرد آبہ تگارۍ، پتہ کرِ لیل۔” ہمسایہ زنانہ آسہ دم پھٹۍ، اونگجہ ژاپان۔ تام انۍ خۅرشہ سرد آبہ تگارۍ۔
جان دیدِ تل شُر تہ کوڈنس گرم آبہ تگارِ منز غۅطہ، اتہِ کوڈن تہ بورُن سرد آبہ تگارِ منز۔ اتہِ کڈتھ کٔرنس زنگن دۅن کمہ تام آیہ تھپھ تہ لجس گلناونہِ۔ خۅرشہ ہیوک نہ ژٲلتھ۔
"جان دیدی، متہ گلوتن۔ اوس نہ خدایس خۅش۔۔۔”
"ژھۅپہ، آیم خدا صابنۍ کۅلے۔”
جان دیدِ کور ترییہ ژورِ لٹہِ شرس یی۔ گرم آبہ سرد آبس، سرد آبہ گرم آبس۔ تتہِ کڈتھ ہوہس منز زنگو رٔٹتھ گلوُن۔ امس اوس پانس بتھس ٹھیچہ عرق وسان، زنتہ اندرہ توندرہ اوسس وہان۔۔۔ تام کٔر شرۍ سۅسرارے تہ اتھۍ سیتۍ دژن یکبارگی چخ۔۔۔ پیاں ں ں ں۔ یہ چخ بوزتھ ژاو اندرہ نیبر پریتھ اکس زو۔
"ہہ کولہ شیطانہ۔” جان دیدِ ژول ہکہ نیرتھ۔
"یہ اوستھ ڈام لوگمت۔ گلناوتھہ بییہ زنگہ رٔٹتھ۔ گژھ وۅنۍ چھے ازۍ کس ماجہ ہندۍ کنۍ معافی۔” یہ ونان ونان تروون ماجہ لرِ۔ امہ پتہ تروون زیوٹھ وۅشاہ، عرق وۅتھروون تہ رژھا گژھتھ کورن سۅ منہ اسناہ۔
صبحن گرہ کن واپس گژھان پرژھس ستارن "موجی ژیہ کونہ ہیوتتھ یمن خونرن بابن انتقام۔ شرس کونہ چیورتھ ہوٹ؟ ژیے ونیاتھ بہ ٲسس دپان یم گژھۍ میہ تل لگنۍ؟”
امہ وونس "میہ ہوت یمن قصاص، مگر ژیہ تگی نہ تہِ بوزن۔ ژہ ما چھکھ وارنۍ۔۔۔۔ تہ ستارس یُس وۅنۍ شیتن ووت چھہ نہ ونہِ تہِ بوزن تگان تمے یمن قصاص ہیوت تہ کیا ہیوت۔
(اگست 1956)

زمرے:افسانہ

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s