تحقیق

کاشرِ زبانۍ ہنزہ کینہہ صوتیاتی خصوصیژہ


منیب الرحمن

[یتھ مضمونس منز چھیہ  یہ ہاونچ کوشش کرنہ آمژ زِ کاشرِ زبانۍ منز چھہ نہ لفظہ کس اندس پیٹھ زیٹھین مصوتن ہند رحجان۔امہِ رجحانہ کنۍ چھہ فارسی عروض ورتاونک عمل تہِ متاثر سپد مت۔یہ چھہ مضمونک گۅڈنیک حصہ۔ دویمس حصس منز ییہِ  پرانین شاعرن ہندس کلامس منز امیک عملی ورتاو وچھنہ۔]

 

ییلہِ کٲشریو شاعرو فارسی عروض ورتاوُن ہیوٚت تمو کرۍ لفظن ہندس مینہ تولس متعلق غیر شعوری طور کینہہ  فیصلہ یم  میانہِ خیالہ زبانۍ ہندِ مزازہ مطابق ٲسۍ، مطلب زبانۍ ہندیو  صوتی  عادتو مطابق ٲسۍ۔ کینہہ پکناوۍ اسہِ برونہہ کُن تہ کینژن پیٹھ کوٚر تہنز عروض ناشناسی زٲنتھ اعتراض۔

پتم وری ترہ پانژترہ مرہ ووت اسہِ   اکثر زبانۍ ہندِ مزازچ کتھ کران مگر عمومی طور۔ وجہ چھہ یہ زِ  کاشر بولن والۍ ٲستھ چھیہ  نہ مزازچ مخصوص نشاندہی سہل۔ عام کتھ  چھیہ  زِ زبانۍ ہنزن خصوصیژن کُن چھنہ سون ظۅن توت تام گژھان یوت تام نہ اسۍ تم بدِ کڈنچ کانہہ شعوری کوشش کرو۔ بہ کرہ کینژن خصوصیژن ہنز نشاندہی  کرنچ کوشش یم سٲنس لسانی آہنگس تہ عروضی ورتاوس متاثر کران چھیہ۔

گۅڈنچ نشاندہی چھیہ  یہ زِ کاشرِ زبانۍ منز چھہ نہ لفظن ہندس اندس پیٹھ خاص طور  زیٹھین مصوتن (long vowels)  ہند کانہہ رحجان۔ یہ چھہ فارسی تہ اردوس خلاف۔ اتھ کتھہِ کر بہ  یتھہ پاٹھۍ  وضاحت۔

کاشرس منز چھہِ پانژھ زیٹھۍ مصوتہ یمن اسۍ   خالص پننۍ  ؤنتھ ہیکو۔ یم مخصوص مصوتہ چھہِ یم:

[تٍر]         لفظک  /  ٍا/
[کٲر]      لفظک  /ٲ/
[گول] لفظک  /او/
[سۅاد]   لفظک  /ۅا/
[تیز]         لفظک  /اے/

یمو منزہ  چھنہ کانہہ اکھ کُنہِ لفظس پتہ کنہِ یوان۔ ممکن چھہ اکا دکا  ما آسہِ کانہہ[ رٍ رٍ ] ہش صوتی ترکیب یتھ منز یمو منزہ کانہہ مصوتہ  اندس پیٹھ یوان آسہِ۔ مثلا
کھساں کوہ تٍرہ ہارنہِ تاپہ رٍ رٍ       (کامل)

یا  کُنہِ آلوس والوس منز ما آسہِ یمو منزہ کانہہ پۆت لگہِ چہ صورژ منز جوڑنہ یوان[مثلا  یتِمو، چھُہمو]۔  پۆت لگہِ چہ صورژ منز کانہہ زیٹھ آواز جوڑنۍ چھہ اکھ چیز تہ خۅد مختار صورژ منز لفظ زیچھہِ آوازِ سیتۍ اند واتُن چھہ بیاکھ چیز۔ لہذا  پیٹھم مخصوص  مصوتہ چھہِ نہ عام طور خۅد مختار لفظن مثلا اسمن، صفتن پتہ کنہِ یوان۔  یہ چھیہ  کاشرِ زبانۍ ہنز  صوتیاتی خصوصیت۔

یمو پانژو مصوتو علاوہ  چھہِ تریہ زیٹھۍ مصوتہ یم اردو تہ فارسی یس سیتۍ  اسہِ مشترک چھہِ۔ مشترک مصوتہ چھہِ یم :

[تنہا]     لفظک  /آ/
[زندگی]  لفظک/ای/
[گفتگو]   لفظک  /اوٗ/

صرف چھہِ یمے  تریہ مصوتہ یم لفظن پتہ کنہِ یوان چھہِ۔ یمن تہِ ہیمو اکہِ اکہِ سام۔

اسۍ تلون گۅڈنی [گفتگو] لفظک /اوٗ/ ۔  امہِ زیٹھہِ مصوتہ سیتۍ چھہ نہ کانہہ کاشر لفظ اند واتان۔ ذہنس منز ما ہیکہِ زوٗ ہیو لفظ یِتھ۔ [ژہ چھکھ میون زوٗ]۔ مگر وارے سنو،  اتھ پتہ کنہِ  چھہ نہ واو  مصوتہ (vowel) بلکہ مصمتہ (consonant)  یعنی /v/ ۔  یہ چھہ نہ /zoo/  بلکہ /zuv/۔ سٲنس رسم خطس منز چھہ /و/  اچھر /o/ تہ /u/ مصوتن ہندِ خاطرہ ورتاونہ یوان تہ مصمتہ  /v/ خاطرہ تہِ۔ اچھا،  /اوٗ/ زیٹھس مصوتس پیٹھ اند واتن والۍ  تقریبا سٲری لفظ چھہِ دراصل فارسی اردو پیٹھہ آمتۍ۔ گفتگو، خوشبو بیترِ۔ صوتیاتک تربیت یافتہ کن ہیکہِ یہ ژینتھ زِ یم فارسی اردو لفظ تہِ چھہِ  کاشرس منز پتہ کنہِ ہلکہ (نصف) مصمتہ /v/ لگٲوتھ یا تصور کٔرتھ بولنہ یوان۔

تلیون وۅنۍ زندگی لفظک /ای/ زیوٹھ مصوتہ۔ امہ مصوتہ سیتۍ تہِ چھہ نہ کانہہ کاشر لفظ اند واتان۔ صرف چھہ یہ پۆت لگہِ چہ صورژ منز لفظن پتہ کنہِ جوڑنہ یوان:

(1) گرامر – گردان کہ ذریعہ فعلس سیتۍ  ضمیر مخاطب  (second person) جوڑنہ کنۍ۔ مثلا۔ گنی

ہے لتی یتھنہ دلس لولہ مژھیل شوق گنی (کامل)

گنُن لفظک گردان:  گنہِ، گنیم، گنی، گنیس، گنیکھ۔

(2) مخاطب کرنہ خاطرہ  مونث اسمن (ناوتین) پتہ کنہِ جوڑنہ یوان مثلا پیٹھمس مصرعس منز  [لٔتی]۔ اسۍ چھہِ ونان "ہتے کوری کتھ بوز۔۔۔”۔ یعنی کور لفظس سیتۍ چھہ /ای/ جوڑتھ [کوری] بناوان مخاطب کرنہ خاطرہ۔

(3) کُنہِ تہِ لفظس پتہ کنہِ /ای/ جوڑنہ سیتۍ تتھ لفظس پیٹھ تاکید (زور) تراونہ خاطرہ۔ مثلا

اسہِ> اسی
اپٲرۍ > اپٲری
سُلہِ > سُلی

مگر یم چھہِ پۆت لگۍ۔ کانہہ کاشر لفظ چھہ نہ یُس بذات خۅد زیٹھس /ای/ مصوتس پیٹھ اند واتہِ۔ اتھ مصوتس پیٹھ اند واتن والۍ لفظ تہِ چھہِ دراصل فارسی اردو پیٹھہ آمتۍ۔ مثلا سردی، چابی، بھابی، روشنی، زندگی بیترِ۔ چونکہ اسہِ چھہ نہ لفظہ کس اندس پیٹھ زیٹھہِ مصوتک عادت اوسمت، اسہِ تروو اتھ زیٹھس مصوتس پتہ کنہِ ہلکہ (نصف)  /y/ یعنی اسہِ تالروو یہ مصوتہ۔ تربیت یافتہ کن ہیکن یہ ژینتھ۔

ٲخرس پیٹھ تلون تنہا لفظک /آ/ زیوٹھ مصوتہ۔ یہ مصوتہ تہِ چھہ کاشرس منز پۆت لگہِ  چہ صورژ منز لفظن پتہ کنہِ جوڑنہ یوان:

(1) سوالیہ پۆت لۆگ مثلا : چھا، ونا، گژھا، بیہما

(چھہ +آ)،(ونہ+آ)،(گژھہ+آ)، (بیہمہ + آ)

(2) کانہہ کس معنی یس منز یعنی کُنہِ اسمس (ناوتس)سیتۍ جوڑتھ ، سہ غیر متعین بناونہ خاطرہ۔

کان>کانا
لواسہ> لواسا
جاے> جایا
نفر > نفرا
کینہہ > کینژھا

(3) خواہش تہ فرضی صورت حال ظاہر کرنہ خاطرہ "ہا”  واحد متکلم پۆت  لٔگس منز    ‎

ونہ ہا۔ گژھہ ہا (گردان: ونہ ہا، ونہ ہو، ونہِ ہے، ونہ ہن)

(4)  آلو  والو دنس تہ ژۆر توجہ حاصل کرنہ خاطرہ لفظن پتہ کنہِ جوڑنہ یوان۔ مثلا دلبر> دلبرا، منیب > منیبا یا "ہا”، "نا”،  "ہتہ با” بیترِ۔

یم سٲری چھہِ پۆت لگۍ۔ یم بذات خۅد زیٹھس (آ)مصوتس پیٹھ اند واتان چھہِ، تم لفظ تہِ چھہ دراصل فارسی، اردو پیٹھے آمتۍ  ۔ مثلا: تنہا، تمنا، اچھا بیترِ۔

چونکہ کاشر زبان چھیہ  نہ لفظن ہندس اندس پیٹھ  زیٹھۍ مصوتہ پسند کران، اسۍ چھہِ یمن لفظن منز  /آ/ مصوتس پتہ کنہِ ہلکہ (نصف) /ہ/ جوڑان یا تصور کران۔

کیا > کیاہ>کیہہ
دنیا> دنیاہ>دنیہہ
فضا> فضاہ > فضہہ
فنا > فناہ>فنہہ

کینژن لفظن منز چھیہ  زیوٹھ مصوتہ /آ/ یتھہ پاٹھۍ لفظہ کس اندس پیٹھ  نہ اننچ صورت پیدہ کرنہ آمژ:

ہوا > ہواو
دریا > دریاو
صحرا > صحراو

کینژن غیر فارسی لفظن چھہ /آ/ مصوتہ ژھۆٹس /إ/ (یعنی عینہ زیر)مصوتس منز تبدیل گژھان۔

لڑکا> لڑکہ
تڑکا > تڑکہ
لہنگا > لہنگہ

اگر اسۍ 1950 تہ 1960 کس کاشرس املاہس پیٹھ نظر تراوو اکثر  لفظ یم /آ/ مصوتس پیٹھ اند واتان چھہِ مثلا چھا، نفرا، دنیا بیترِ، یم سٲری لفظ چھہِ پتہ کنہِ /ہ/ جوڑتھ لیکھنہ آمتۍ۔

پیٹھمہِ تبصرہ مطابق چھیہ  یمن ترین مشترک  زیٹھین مصوتن یم تبدیلی سپدان:

/ اوٗ/چھِن وٹھن نزدیک انان (labialization)۔
/ ای / تالس نزدیک انان  (palatalization) تہ
/ آ / مصوتس پتہ کنہِ چھہِ ہکٲریتھ جوڑان (aspiration)۔

یمو صوتی عملو سیتۍ چھیہ  یمن مصوتن منز دراصل صوتی تدریج (glide) ہش صورت پیدہ گژھان۔ چاہے پننۍ مخصوص مصوتہ آسن یا فارسی اردوس سیتۍ مشترک مصوتہ، چاہے خالص کاشرۍ لفظ آسن یا فارسی اردو پیٹھہ آمتۍ لفظ، کاشرس منز چھہ نہ لفظن پتہ کنہِ زیٹھین مصوتن ہند رحجان، بلکہ وار ہے سنو، کاشرس منز چھہ نہ لفظن اندر تہِ زیٹھین مصوتن ہند زیادہ رحجان۔ اتھ دویمہ نشاندہی کرہ بہ یتھہ پاٹھۍ وضاحت۔

یم مصوتہ ٲسہ کس برونہمس حصس  یا پتمس حصس منز بناونہ یوان چھہِ یعنی برونٹھم تہ پتم مصوتہ (front and back vowels)، تم چھہِ تمے مصوتہ یمن اسہِ مشترک مصوتہ وۆن۔دوبارہ یاد پاونہ خاطرہ مشترک مصوتہ مطلب یم مصوتہ فارسی، اردوس سیتۍ اسہِ مشترک چھہِ۔ فارسی،  اردوس منز چھہِ نہ "منزم مصوتہ” (central vowels)۔ مگر کاشرس منز چھہِ ۔ "منز مصوتہ ”  چھہ زیوِ ہندس منزمس حصسس نش بناونہ یوان۔ یم "منز مصوتہ”  چھہِ برونٹھمین ہندِ کھوتہ پتمین مصوتن سیتۍ  زیادہ تعلق تھاوان۔ سۅ کتھ الگ، مگر ییتہِ برونٹھم تہ پتم مصوتہ ریزونسس (resonance)  کنۍ زیادہ زیچھر لبان چھہِ "منزم مصوتہ” چھہِ ریزوننس خاطرہ  مناسب جاے میسر نہ آسنہ کنۍ زیچھرس منز  کم آسان۔ یہ کتھ چھیہ  سیٹھا ٹیکنکل لہذا کٔر میہ مختصر پاٹھۍ بیان۔ (یہ معاملہ چھہ بییہ ہن تجربہ تہ تجزیہ منگان یُس ونکیس ممکن چھہ نہ۔) کاشرس منز "منزم مصوتچ”  کٹگری  آسنک مطلبے چھہ یہ زِ سانۍ  تمام مصوتہ چھہِ زیچھرس منز نسبتا کم۔ یہ چھہ سانہِ زبانۍ ہند کلہم رحجان۔  اتھ پیٹھ سپدِ بییہ کُنہِ مضمونس منز وضاحت سان کتھ۔فی الحال تلیوکھ  یم لفظ:

فارسی/ اردو: خالی، شاعری، آزمائش، آسمانی، آفتاب

یمن لفظن منز چھہِ زہ زہ زیٹھۍ مصوتہ۔ خالی لفظس منز چھہِ /آ/ تہ /ای/۔ یمے ز مصوتہ چھہِ شاعری لفظس منز تہِ۔ آزمائش لفظس منز چھہِ زہ زیٹھۍ مصوتہ /آ/ تہ /آ/۔ آسمانی لفظس منز چھہِ تریہ زیٹھۍ  مصوتہ: /آ/، /آ/ تہ /ای/۔ آفتاب لفظس منز چھہِ زہ زیٹھۍمصوتہ /آ/ تہ /آ/۔

لفظن منز اگر زہ یا دۅیو کھوتہ زیادہ زیٹھۍ برونٹھم یا پتم مصوتہ (front or back long vowels) آسن، کاشر زبان چھیہ  امہ قسمہ کین زیٹھین مصوتن ہنز عاشق نہ آسنہ کنۍ یمن لفظن منز یتھہ پاٹھۍ تبدیلی کران۔

خالی تہ شاعری چھہِ خٲلی تہ شٲعری بنان۔ یعنی  پتم مصوتہ /آ/ چھہ /ٲ/  منز مصوتس منز بدلان۔
آزمائش تہ آسمانی  چھہِ آزمٲیش تہ آسمٲنی  بنان یعنی دۆیم /آ/ چھہ  دۅشونی منز /ٲ/ مصوتس منز بدلان۔
آفتاب چھہ افتاب بنان یعنی /آ/ چھہ ژھۆٹس مصوتس منز (زبرِ منز) بدلان۔

ٲخری لفظ “آفتاب” ترٲوتھ، اسۍ چھہِ یمن لفظن ہند پتم مصوتہ (back vowel) منز م مصوتس (central vowel) منز بدلاوان۔  یہ چھہ نہ صرف فارسی اردو لفظن سیتۍ سپدان بلکہ کاشرین لفظن سیتۍ تہِ۔ مثلا:

کڈان چھہ نہ کڈانی بلکہ کڈٲنی بنان
لڈان چھہ نہ لڈانی بلکہ لڑٲنی بنان

وجہ یہ زِ کاشر زبان چھیہ  نہ لفظن منز اکہ کھوتہ زیادہ مشترک مصوتہ(آ، ای، او) برداشت کران۔ دویم مشترک زیوٹھ مصوتہ چھہ "مٔنزمِس زیٹھس مصوتس” منز بدلان (آ>ٲ)۔ میانہِ خیالہ چھہِ "منز م مصوتہ” پتمین مصوتن ہنزہ صوتی ماحولہ مطابق تبدیل شدہ شکلہ۔ یہ چھہ الگ بحث یتھ پیٹھ سیٹھا محنتچ ضرورت چھیہ۔

زیٹھین مصوتن ہنز ناپسندیدگی ہیکون اسۍ علاقہ وار پھیرن منز تہِ وچھتھ۔ مثلا

ونان > ونن
تھٲوۍ> تٔھوۍ

یہ تجزیہ واتناوون اسۍ یتھہ پاٹھۍ اند۔ کاشرِ زبانۍ ہند کانہہ تہِ تحریر تلیون تہ تتھ منز وچھو زیٹھین تہ ژھۅٹین مصوتن ہند تعداد۔ مثلا یم اقتباس:

"ستارہ ژاو وارہ کارہ شیتن، توتہِ چھس نہ بوزن تگان زِ میانہِ ماجے تمن مارہ واتلن میون مول مارنک قصاص ہیژاو تہ کیا ہیژاو۔

کتھ چھیہ  وری واد پرانۍ ییلہ ترہ ترہ گام ژھنڈتھ تہِ کانہہ پن ناون واجینۍ ٲس نہ میلان۔ سۅ تہِ بۅنہ کوٹ چہ جان دیدِ ہش یمۍ سنزہ کرامٲژ ونہِ تہِ اتھ سٲرۍ سے علاقس منز پھرنہ چھیہ  یوان۔” قصاص، امین کامل

زیٹھۍ مصوتہ تعداد: 35
ژھۆٹۍ مصوتہ تعداد: 53

"چالیس پچاس لٹھ بند آدمیوں کا ایک گروہ لوٹ مار کے لیے ایک مکان کی طرف بڑھ رہا تھا۔

دفعتہ اس بھیڑ کوچیر کر ایک دبلا پتلا ادھیڑ عمر کا آدمی باہر نکلا۔ پلٹ کراس نے بلوائیوں کو لیڈرانہ انداز میں مخاطب کیا۔’’بھائیو، اس مکان میں بے اندازہ دولت ہے۔ بیشمار قیمتی سامان ہے۔” مزدوری، سعادت حسن منٹو

زیٹھۍ مصوتہ تعداد: 55
ژھۆٹۍ مصوتہ تعداد:39

زیٹھین مصوتن ہند تناسب چھہ کاشرس منز اردو کھوتہ کم۔ کاشرس منز چھہِ مشترک زیٹھۍ مصوتہ 35 ہو منزہ صرف 3  لفظہ کس اندس پیٹھ، اردوس منز چھہِ 10 لفظہ کس اندس پیٹھ۔ یہ کتھ ونو یتھہ پاٹھۍ تہِ زِ کاشرس اقتباسس منز چھہِ کل 61 ٹھن لفظن منز صرف 3 لفظ یمن اندس پیٹھ مشترک زیٹھۍ مصوتہ یوان چھہِ۔ اردو اقتباسس منز چھہ 56 ہن لفظن منز یمن ہند تعداد 10 ۔

پیٹھمہ  تمام بحثہ منزہ ہیکوکھ یم نتیجہ کڈتھ:

(1)  فارسی، اردوس مقابلہ چھہ لفظن منز زیٹھین مصمتن ہند تعداد کم
(2) کینہہ مخصوص زیٹھۍ مصوتہ (منزم مصوتہ) چھہِ زیچھرس منز مشترک مصوتن مقابلہ کم ۔
(3) لفظہ کس اندس پیٹھ چھہ نہ زیٹھین مصوتن ہند رحجان۔
(4) لفظہ کس اندس پیٹھ  چھہ مصوتن عموما سیٹھا کمزور شکلہِ منز تالرۍ  /ۍ/ جوڑنہ یوان، یا وٹھل /او/  جوڑنہ یوان، یا ہکارۍ /ہ/ جوڑنہ یوان۔

ٲخری اہم کتھ چھیہ  زِ اردو تہ فارسی زبانن منز چھہِ نہ لفظہ کس اندس پیٹھ ژھۆٹۍ مصوتہ یوان، لہذا چھہ نہ لفظہ کس اندس پیٹھ کُنہِ زیٹھس مصوتس تہ ژھۆٹس مصوتس درمیان مقابلہ یعنی معنوی مقابلہ ییلہ زن کاشرس منز کینژن مصوتن درمیان یہ مقابلہ محدودے سہی مگر ممکن چھہ۔ مثلا:

اسی/ اسہِ
أتی/أتۍ
تلا/تلہ
نا/نہ
ہو/ہہ

یہ تجزیہ تہ یم نتیجہ چھہِ یہ کتھ سمجنہ خاطرہ کافی زِ اردوس منز کیازِ چھہِ وزنن منز لفظہ کہ پتمہ  اندکۍ /آ/، /او/ تہ /ای/ ژھوٹرنہ(دباونہ) یوان تہ کاشرس منز کیازِ چھہِ نہ۔ تم اگر یم زیٹھۍ مصوتہ ژھوٹران چھہِ تمن چھہ نہ (1) معنوی کنفیوجنک امکان تکیازِ تمن چھہ نہ لفظہ کس اندس پیٹھ کاشرکۍ پاٹھۍ ژھوٹین تہ زیٹھین مصوتن درمیان معنوی مقابلہ۔(2)  لفظہ کس اندس پیٹھ ینہ والین سانین زیٹھین مصوتن چھہ پتہ کنہِ یا تہ ہلکہ /و/ یا ہلکہ /ۍ/ یا ہلکہ /ہ/ یوان یا تصور کرنہ یوان۔لہذا چھہ نہ مصوتہ ژھوٹراونچ کانہہ گنجایش۔

یم کتھہ مدنظر تھٲوتھ، یم مسلہ فارسی عروض کس ورتاوس منز کاشرین شاعرن پیش آمتۍ چھہِ، تم چھہِ غور طلب تکیازِ فارسی عروضک دارہ مدار چھہ زیٹھین تہ ژھۅٹین مصوتن ہنزن مخصوص ترتیبن پیٹھ۔

(باقی آیندہ)

زمرے:تحقیق

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s