شاعری

وژن: حیرتھ، حیرتھ ناکھ


نسیم شفایی

لکہ ارساتس بِرہ بارس منز
ہنگہ منگہ راوُن تہِ چھہ حیرتھ
شامن شامن دل چہ سرایہ
سہ بر وۆتھ تراوُن حیرتھ ناکھ

عشقہ چہ کرایہ اندر وۅٹھ لٲیتھ
دزنچہ پھُلیہ درُن حیرتھ
حآرتھ حسرتھ کھونہِ للہ ناوُن تہِ چھہ حیرتھ
گردِ غبارس منز کانہہ ژھارُن حیرتھ ناکھ

واوچہ ہیرِ کھستھ اوس واتُن
اوبرہ چہ کٲنی تام تمن
دل دۆر کرنچ کتھ ٲس حیرتھ
شوقے اوس سہ حیرتھ ناکھ

عشقہ پیچاننۍ ژھٹھ رٔٹ ہی تھرِ
واوس ژھایہ ؤجن پانس
واوک شانکُن تنبلُن حیرتھ
دم دٲر شہہ بند حیرتھ ناکھ

ترین اچھرن ہند سودا کنہِ ہا
سودا گار سہ سر بازار
اتہِ چھُس زینُن ہارُن حیرتھ
بے پژھ کار چھہ حیرتھ ناکھ

 

 

 

زمرے:شاعری

Tagged as:

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s