شاعری

20 نظمہ


صوفی شوکت

1
تصور

یمن گاسہ کریچن منز
کینہہ زندگی ہندۍ نشان
یا چھہِ پننہ نفسکۍ مسافر
نتہ چھہِ وقتہ کس رخشس پیٹھ سوار
آزار دلن ہندۍ

 

2
اتفاق

توپتہ تہِ اۆن نہ واون زانہہ
سہ اۆبرہ لۆنگ یتھ کُن وچھتھ
صحراوۍ اچھن آب پھیراں اوس
وۅنۍ چھہ استانہ دارین
دشین کِژ جاس مۄکلیامژ

 

3
مراقبۂ موت

ژہ رٹھ تسبیح
تہ گنزراو ژہۍ
یہ خاک چھینہ بنجر
یہ کھیاوُن تن پننۍ
تہ گنزاو ژہۍ
از نہ پگاہ
پھۄلن سوسن
چانین أچھن ہنز طراوتھ

 

4
عکس

خوابہ شکارۍ رٲژ ہند نقاب ترٲوتھ
آو
وچھس چاکھ ترٲوتھ
لۆبن نہ کینہہ
دوپمس بہ تہِ چھس چٲنی پاٹھۍ
خوابے خرچان

 

5
حرام نظر

پریتھ بدن اکھ گلابۍ قبرستان
پریتھ نظر چھیہ مرنہ باپتھ بے قرار
مرن مگر بے جنازہ بے کفن
گژھن دفن تہ مشن
مگر سہ اکھ نظر حرام نظر
یتھ وعدہ چھہ نہ مرنک
قیامژ تام

 

6
گۄنہک ثواب

جرم چھہ یی زِ میہ تۆگ نہ سرُن
مگر سہ بدن اوس دزان
ؤریہِ وادو پیٹھہ
سہ پراران اوس تمن اتھن
یم تس نارہ غلاف مژراوہن
بہ اوسس آب
تہ میہ کۆر سرتاپا سیراب

 

7
غزل

شیشوین کاغذن پیٹھ
شیشو قلم چلاوُن
تہ اکھ شیشو بدن بناوُن
میانین شیشوۍ خیالن منز
چھیہ نہ اکھ تہِ شبیہہ
بناں چھہ آسِہ تہِ ما
مگر یہ شیشہ خانہ چھہ نوزک

 

8
رمل

یتھ سیکستانس اندر چھا
کانہہ اکھا یُس دانیالس
ناد لایس
پریتھ اکس قدمس چھہ کُھر ہیو
کریوٹھ سخ گۆو ۅنۍ سفر
کانہہ وظیفاہ
کانہہ عطائ پاسِ للہ . . .
نتہ چھیہ شاید
سیکھ نصیبس تژھ مہیب
یتھ اندر بے معنہ حرفن
زال وۆلمت فاعلاتن
راگ وحشی وچھ ژٹان

 

9
یقین

یہ اکھ ٲخری سطر
چانہِ ناوچ لیکھتھ
سخن تمام سپدن
میانہِ قلمکۍ
ژہ کر پژھ میانین شہن پیٹھ

 

10
وجد

پنزۍ کلین پیٹھ
شاخ تولان
ژھوپہِ ہنزِ تنہِ منز
والاں شراکھ
راتہ مۅغل کلہ ترٲوِتھ کوچھہ منز
لوتہِ لوتہِ گنگراں الاللہ

 

11
گاہ بیہ گاہ

نظر نظر چھیہ رلان
تہ بدن چھہ سپدان
تریشے تریش
یمن سراین منز چھہ نہ آبک ناو نشانے
زیو لٔج تالس
ہیو فرشتو تریشاہ دی تو

 

12
شکست

بہ
آوارہ وقتک
آوارہ برونز
بسُن تگیم نہ زن
چانہ بستی اندر
ون پناہ دکھا؟

 

13
شٲپتھ

یہ تن یتھ اندر
بہ قید چھس
تہہ در تہہ چھہ موکل پالان
شہہ در شہہ چھم زالان خواب
پژھہِ ہنز ژادر کیتس کالس
رچھہِ تتھ بدنس
پنہ پنہ یُس زندانن کھیہ

 

14
امید

تمہِ پتہ آو نہ ذہنس منز تس
کانہہ تہِ خیال
تمہ پتہ وچھ نہ گلالن تمۍ سندۍ
بییہ کانہہ سونتھ
تمہ پتہ چھۆل نہ تمۍ سندۍ روٗدن
کانہہ تہِ گلاب
تس ٲسۍ چشمن منز ٹھہریامتۍ
پاردۍ انگ

 

15
آدم کھاو

یہ لٔر پییہ نہ پتھر یکبار
مگر کُنہِ ساتہ کرکھ محسوس
میژ
یۅس کھۄرو تل آہستہ نیران چھے
وقتکۍ رسلۍ تہ مژھلۍ ژہۍ
چھہِ نہ بانبرۍ آسان
تمے چھہِ پراوان میژِ ہند آکار
ٲخر نینگلان سٲرے لٔر

 

16
ستھ

ودکھ
تہ شہل ساتھ کانہہ ییی نہ ساتس
دزکھ
تہ واو سونتک ژیہ ما سا شہلٲوی
اسکھ
تہ زمانہ سورے آسہِ عزا دارن منز
مرکھ
تہ شعر چونے لیکھن مزارس پیٹھ
ژہ چھکھ
شہنشاہ پننہ لفظہ کایناتک
تہ رچھی ستھ ژیہ فقط
سہ اکھ حرف یُس
دواں چھہ زیو پریتھ امکانس

 

17
تحریر

رکھن منز جود بٔرتھ
حریرس رنگ سہ چٔھکتھ
اناں کانہہ عطرِ مٔلتھ
اچھن تل
پتھ کالک یاگۍ ژیوہ اکھ
یُس میانین نحیف اتھن منز
سیماب ہیو لرزان اوس

 

18
بھیرو

میہ گٔر لفظن ہانکل ٲخر
میہ کۆر ٲخر وقتے قید
بے چھس زانان رٲچھ بیہُن تتھ
یمہِ منز نیران وحشی راتھ
دیوانن ہنز سنگرمال
میٲنی پوزا کرن قلم وۅنۍ
میۍ نش واتن دانا بینا
کشکول اتھن کیتھ ہیتھ
بے چھس حرفن ہندِ کیلاشک مالک
بےبھیرو

 

19
پرواز

کتھن ہنز قلاے
تھدان تھدان
وٲژ اسمان تام
خاکۍ مکان گۆو پست
تیوت زِ
رود اچھ منز کِٹُر
لایس پھۄکھ
نیریا؟
نہ

 

20
اصرار

بہ مژراوہ بر
تہ وچھتھ
سراپا ملال
میانِس قدس برابر
سانۍ نظر روزِ اویزاں
وقتس
تہ بے آواز بازگشت
سانین کتھن ہنز
سانین ژھاین گتھ کران
اسہِ درمیان حایل
یہ بر
سپدیا بند؟

 

زمرے:شاعری

Tagged as:

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s