تنقید

غزل تہ رسول میرس برونہہ امیک ورتاو


فردوس احمد پرے

لفظ غزل چھ مشرقی سر زمین منز بارسس آمت۔ مشرقی زبانو منز چھیہ عربی زبان اکھ تژھ زبان ییتہ گۅڈہ پیٹھے قصیدہ گویی ہند رواج اوس۔ یہ قصیدہ چھ اتہِ ترین حصن منز باگرنہ آمت پتم زہ حصہ ترٲوتھ یُس امیک گۅڈنیک حصہ چھہ تتھ چھہِ تشبیٖب ونان۔ تشبیب چھہ قصیدک سہ حصہ یتھ منز عاشقانہ موضو ع بیان چھہِ یوان کرنہ۔ اتھ منز چھہ شاعر محبوب سند سراپا تہِ نظماوان۔ ییتین گژھہِ نہ یہ مغالتہ گژھن زِ تشبیٖبس منز کیا چھہِ نہ باقی موضوعات ورتاونے یوان۔ اتھ منز چھہِ دلکۍ حارثاتھ، سرمستی، انسانی حیاتچ ناپایداری، زمانچ ناقدری، ذاتی تہ اجتماعی حارثاتھ تہِ پیش یوان کرنہ۔ عربی قصیدک یۆہے تشبیبب بنیاو غزلک بنیاد۔ امہ پتہ ییلہ قصیدہ عربی زبانۍ پیٹھہ فارسی زبانۍ منز وۅت تتہِ کۆر فارسی زبانۍ ہندیو شاعرو غزل قصیدہ نشہ بلکلے علیحد تہ یہ بنووکھ اکھ الگ صنف۔

غزلس تہ قصیدس چھیہ ہیتی اعتبارہ واریاہ قربت۔ قصیدکۍ پاٹھۍ چھہِ غزلس منز تہِ مطلع تہ مقطع آسان۔ غزلہ کس گوڈنکس شعرس چھہِ مطلع ونان یُس طلوع منزہ درامت چھہ یمیک معنہ چھہ کُنہِ چیزچ شروعات۔ غزلہ کس گوڈنکس شعرس منز چھہِ دۅنوے مصرعہ ہم قافیہ تہ ہم ردیف آسان بعضے اگر نہ ردیف آسہِ تہِ مگر قافیک آسن چھہ لازمی ییمہ ورٲے غزل نا مکمل چھہ ماننہ یوان۔امہ پتہ چھہ غزلہ کس پریتھ شعرکس دویمس مصرعس منز یۆہے قافیہ دہراونہ یوان۔ ییمہ سیتۍ غزلس اکھ مخصوص ہیت چھیہ بنان۔ غزلہ کس ٲخری شعرس چھ مقطع ونان یتھ منز شاعر پنن ناو بصورت تخلص ظاہر چھہ کران۔ گۅڈہ گوڈہ اوس وننہ یوان زِ غزلس گژھن نہ پانژو یا ستو شعرو کھۅتہ کم شعر آسنۍ یا اکوہو کھۅتہ زیادہ تہِ گژھن نہ آسنۍ۔اتھ پیٹھ روز یہ پابندی واریاہس کالس حٲوی مگر اوتام اوس غزل موضوعی طور تہِ محدود۔ اتھ منز ٲسۍ صرف عشقیہ موضوع ورتاونہ یوان مگر وقتس سیتۍ سیتۍ آیہ اتھ منز باقی موضوعات تہِ ورتاونہ تہ اتھ ٖمیج کشادگی تہ شعرن ہنز یہ پابندی تہِ گیہ ختم۔ امہ پتہ آیہ واریاہ طویل غزل لیکھنہ۔

ییلہ غزل کس لغوی معنیس متلق کتھ کرو وننہ چھہ یوان زِ غزل گۆو زنانن متلق کتھہ کرنہِ یا زنانن سیتۍ کتھہ کرنہِ۔ امہ تلہ چھہ ننان زِ امیک دٲیرہ چھہ حسن پرستی تہ مجاز۔ مگر امہ پتہ آیہ اتھ منز نوۍ نوۍ تجربہ کرنہ۔ غزلن کرۍ پانس اندۍ پکۍ ساری سرحد مسمار۔ امۍ کۆر وۅنۍ عام انسانی زندگی ہندین تمن مسلن تہِ احاطہ یم اتھ منز پیش کرنۍ عجیبے ٲسۍ باسان۔ بلکہ اوس غزلس منز عشقیہ موضوع ورٲے بییہ کانہہ موضوع ورتاون غلط ماننہ یوان۔شمس الدین قیس رازین چھہ غزلس بیاکھ تاویل کۆرمت۔ سہ چھہ اتھ غزال لفظس سیتۍ ہشر دوان۔ غزال لفظک معنہ چھہ ہِرن۔ قیس رازی چھہ ونان زِ غزالچ اکھ مخصوص آواز چھیہ یتھ غزل الکلب چھہِ ونان۔ییمۍ ساتہ اکس غزالس یا ہِرنس شکارۍ ہونۍ اندۍ اندۍ گیرہ چھہِ کران تس چھیہ تھرہ تھرہ وۅتھان ییمہ سیتۍ تمۍ سندِ حلقہ منزہ اکھ درد بٔرژ آواز چھیہ نیران۔یہ آواز بوزتھ چھہ شکارۍ ہونین ہِرن سندس موصومیتس پیٹھ ترس یوان تہ تم چھہِ تس یلہ تراوان۔ہِرن سنزِ آوازِ منز چھہ اکہ طرفہ خوف تہ مایوسی زِ وُنۍ نتہ وُنۍ کڈنس جان مگر دویمہ طرفہ چھیہ اتھ منز رہا گژھنچ رجایی تہ موجودہ۔امہ تعریفہ تلہ چھہ یہ مراد نیران زِ غزل کس موضوعی دٲیرس میج وسعت۔ عشقہ علاوہ آیہ اتھ منز زندگیہ ہنز کشمکش، خوف، امیدوبیم وغیرہ ہوۍ مضمون تہِ پیش کرنہ۔غزلہِ ہند موضوع چھہ نہ ہیرہ پیٹھ بۅن تام ہوے آسان بلکہ چھہِ اتھ منز الگ الگ شعرن منز الگ الگ موضوع پیش کرنہ یوان۔ امہ کس اکس اکس شعرس چھہ بیۆن تہ بدون دنیا آسان ۔امہ کنۍ آو غزال لفظک ہشر غزلس سیتۍ بییہ ہن محکم بناونہ زِ یتھہ پاٹھۍ اکھ غزال اکہ جایہ پیٹھ بییس جایہ تام ژھالہ تلان چھہ تتھے پاٹھۍ چھہِ غزلکۍ شعر تہِ موضوعی لحاظہ اورہ یور نژنہ خاطرہ آزاد آسان۔  گۆو بییہ چھیہ یہے کتھ برونہہ کُن یوان زِ غزلک پریتھ اکھ شعر چھہ پننہ پننہ جایہ اکھ منفرد وجود تھاوان۔ اتھ منز چھہ نہ دۅن شعرن پانہ وانۍ موضوعی واٹھ آسن ضروری۔ مگر تمہ باوجود تہِ چھہِ تم غزل تہِ لیکھنہ یوان یمن ہیرہ بۅن اکے موضوع چھہ آسان۔ تتھس غزلس ونو مسلسل غزل۔

غزل لیکھنس وۆتھ مستند پاٹھۍ فارسی زبانۍ منز دس۔ییتہ شیخ سعدی شیرازی، حافظ، امیر خسرو ہوۍ بڈۍ بڈۍ فارسی شاعر اتھ منز خیال آرایی کران ٲسۍ۔کشیٖر منز ییمہِ ساتہ فارسی زبان وٲژ امیک اثر پیۆو گوڈہ ییتہ کین عالمن، دانشورن تہ خاص کر شاعرن پیٹھ۔تہندِ خاطرہ بنیاو فارسی لیکھن تہ پرن اکھ امتیازی مسلہ۔ امہ کنۍ بنٲو ییتہ کیو اکثر شاعرو فارسی زبان پنن ذریعہ اظہار۔ فارسی شاعری پرنۍ تہ شاعری کرنۍ بنیاو سماجی مرتبہ حاصل کرنک اکھ وسیلہ۔ امہ اثرک خاص تر دراو یہ زِ کاشرس اندر تہِ آو غزل لیکھنہ۔ یہ آو وژنہ کس ہیتس منز لیکھنہ تکیازِ وژن اوس اتھ دورس منز کاشر زبانۍ ہند غالب صنف۔مگر کاشر زبانۍ ہند گوڈنیک غزل کمۍ لیوکھ اتھ پیٹھ چھہِ واریاہ بحث آمتۍ کرنہ۔ یودوے تخلیقی لحاظ رسول میر کاشر غزلک گوڈنیک پڑاو چھہ مگر تس برونہہ تہِ آیہ واریاہ غزل لیکھنہ۔ یمن منز فاخر، سعداللہ، محمود گامی وغیرہ چھہِ۔ کاشر زبانۍ ہند مشہور تہ مایہ ناز محقق ناجی منور چھہ سعداللہ ہس کاشریک گوڈنیک غزل گو آسنک دستار گنڈان۔ سعداللہ ہس پتہ چھہ فاخر یُس تمۍ سند ہمکال اوس، سہ تہِ چھہ غزلس منز کینہہ تجربہ کران بلکہ چھہِ کینہہ محقق لیکھان زِ فاخرنے چھہ شعوری طور کاشرس منز گوڈنیک غزل لیۆکھمت۔ میر عبداللہ بیہقی تہ غنی کشمیری ین تہِ چھہِ غزل لیکھۍ متۍ۔ یم دۅنوے ٲسۍ کاشرۍ مگر یمو لیۆکھ فارسی زبانۍ منز غزل ۔اگر زن سعداللہ ہن گوڈہ فارسی شاعری کر مگر ٲخرس پھیور کاشرس کُن۔ بقول ناجی منور:

’’ کاشرس منز چھہ نہ ارداہمہ شتہ کس نصفس تام غزلک کانہہ نیب نشانہ بوزنہ یوان۔تہ یتھہ پاٹھۍ چھہ کاشریک گوڈنیک غزل سعادتؔ سندے مانن ضروری‘‘۔
(ناجی منور، انہار،غزلک فن ۲۰۰۴ صفہ ۲۴)

اتھ برعکس چھہ رفیق راز محمود گامیس کاشریک گوڈنیک غزل گو مانان۔ سہ چھ لیکھان: ’’دستیاب تحقیٖقہ مطابق ورتٲو غزلہِ ہنز صنف کاشرس منز گۅڈنچہ لٹہ ِمحمود گامی ین۔ محمود گامی اوس فارسی خواندہ تہ تمۍ کٔر یہ صنف کاشرس منز متعارف‘‘۔ (رفیق راز، انہار، غزلک فن ۲۰۰۴،ص ۴۱)

راز چھہ امہ پتہ یہِ تہِ لیکھان زِ محمودس برونہہ یا تس پتہ لیۆکھ نہ کانسہ کاشرۍ غزل اگر کانسہ کانسہ اور کُن توجہ کۆر تہ سہ اوس ناقابل اعتنا۔ یہ بحث چھہ وُنہِ تہِ تحقیقچ منگ کران تکیازِ سٲری محقق چھہِ پننۍ پننۍ راے دوان مگر کنہ جایہ چھہِ نہ اکس رایہ پیٹھ متفق سپدتھ اتھ مسلس اندر بور دوان۔

بحثیت کاشرِ ادبک اکھ ادنی طالب علم چھس بہ ناجی منورس سیتۍاتفاق کران زِ کاشرس منز چھہ سعداللہ گوڈنیک غزل لیکھان۔تمۍ سند چھہ میہ صرف اکھ غزل وچھمت تہ پورمت۔امہ غزلک موضوع اۆک طرف ترٲوتھ ییلہ امہ کس ہیتس سام ہیوان چھہِ یہ چھہ پورہ پاٹھۍ غزلہ کس تتھ قٲلبس منز یوان یس امہ پتہ موجود دورس تام چلان رود۔ غزلہ کس ہیتس متلق آو گوڈے ذکر کرنہ۔ یہ چھیہ اکھ پابند صنف۔ امہ کس ہیتس منز آو نہ زانہہ تغیر۔ ییلہ سعداللہ سند غزل پران چھہِ اتھ منز چھیہ برابر یہے ہیت میلان یعنی امہ کہ گوڈنکہ شعرکۍ مصرعہ چھہِ اکس مخصوص ردیف قافیس پیٹھ اند واتان۔ پتہ چھہ یۆہے ردیف قافیہ باقی شعرن ہندین دویمن مصرعن منز پھرۍ پھرۍ یوان تہ یتھہ پاٹھۍ پننۍ لوازمات پورہ کران۔

قدر زندگی زان کہ دنیا چھ برم اے دل
کاتیاہ وچھہکھ سرمہ اچھۍ، مانزنم اے دل
دریا چھہ موّاج ژہ چھکھ موج ہوا تس
دریا ژہ چھکھ، ناوسہ چھہ، ناو تم اے دل
گارن گری چھیہ یار کرس گر گرے گتھ
پانس نشے چھہ جان وندس دم دم اے دل
گورن ژے پورنے نا ژہ زیارت کرو فوراً
کھوژن کوو چھکھ کھور مرتھ والۍ نم اے دل

غزلکۍ یم مصرعہ پٔرتھ چھیہ یہ کتھ پانے واضح گژھان ییمۍ کس اساسس پیٹھ بہ ناجی یس سیتۍ اتھ واس کران چھس۔

امہ پتہ چھہ محمود گامی واحد شاعر ی یمۍ رسول میرس برونہہ کاشرس غزلس منز کینہہ مستحسن تجربہ کرۍ۔ تمۍ سندس زمانس منز اوس کشیٖر منز وژنک چلے جاو۔ امچ روایت ٲس حبہ خاتونہِ تہ تس پتہ کینژو شاعرو برونہے قایم کرمژ۔ وژنس متلق چھیہ یہ کتھ اہم زِ وژن لیکھنہ وزِ اوس شاعر پنن سورے توجہ یتھ کتھہِ کُن دوان زِ یہ گژھہِ سازس کھُسن۔ امہ خاطرہ اوس سہ بعضے وژنکۍ باقی فنی لوازمات قربان تہِ کران تہ بعضے تمن کُن کم توجہ دوان۔حسب روایت ہیژ محمودن تہِ اتھۍ منز خیال آرایی کرنۍ۔ تمۍ تہِ لیکھۍ امی آیہ وژن۔ وژن سازس کھُسن بنیاو امیک اکھ التزامی جز۔ اتھ دوران کۆر محمود گامی ین اکہ طرفہ غزل لیکھتھ وژن ہیتہ نشہ انحراف مگر دویمہ طرفہ تھون اتھ منز تہِ سازک آہنگ برقرار۔ شاعر اوس پنن کلام عامس تام واتناونہ خاطرہ اتھۍ مستعمل کران۔ تکیازِ پرنک لیکھنک رواج اوس سیٹھہے کم۔ محمودن غزل چھہ واریاہس حدس تام وژنس قریب یودوے تمۍ غزل لیکھتھ روایتہ نشہ الگ نیرنچ کوشش تہِ کٔر مگر سہ ہیوکنہ اتھ منز کامیاب گژھتھ۔

غزلس منز ورتوو محمودن خالص عشق یتھ منز بعضے سریت تہِ نظرِ گژھان چھیہ تہ بعضے چھہ زمینی لول تہِ باونہ آمت۔فارسی زبانۍ ہند مطالعہ آسنہ کنۍ چھہ امیک اثر تمۍ سندس غزلس پیٹھ تہِ پیومت مگر محمودن چھہِ  فارسی الفاظ و ترکیب تتھہ پاٹھۍ کاشرس مزاجس منز ورتاومتۍ ییتہ نہ یم سمجھنس منز کانسہ دشواری چھیہ گژھان۔

لاو حورے چھۅکھ لویتھم ٹکھ ہیوتتھم ببرے
بے خبرے چھکھ نہ تبرے ہیوتتھم ٹھل مدنو
ہی باغ پوشن مالہ کرس لالہ مے چھم داغ
کر ییہ درشن دیہ وتھرس پوشہ پھوتۍ ہے
امہ حورِ ماہ رۅخسارہ ہاو تہ ژور نیونم دل
امہ دور درشن دتھ مے سورگچہ حورِ نیونم دل

محمودن یودوے غزلس منز واریاہ کم تجربہ کرۍ مگر یمو تجربو کٔر امہ پتہ باقی شاعرن ہند خاطر اکھ وتھ ہموار۔ روسل میرس ورٲے رودۍ یم سٲری شاعر پتہ اتھۍ نہجہ منز شعر ونان۔ یمن منز مقبول امرتسری، عبدالاحد ناظم، مقبول شاہ کرالہ وارۍ وغیرہ خاص پاٹھۍ چھہِ۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s