افسانہ

جی ایم آزاد سند افسانہ ” یم ژہۍ”


شاہ صٲب اوس موہنوۍ سندِ گھرہ کھسنہ کنۍ پننسے بنگلس منز نِنہ آمت۔ تمۍ کوٚڈ لینفہِ تل کلہ تہ پانس کھوورِ طرفہ کمرہ کس کونس ترٲون سٹووس پیٹھ سیوٚد نظر۔ گیس دانس اوس اوترہ شامس گیس موکلیوومت تہ شاہ صٲبس ٲس نہ گیس مٔٹ بٔتھ اننچ وۅنۍ رژھ تہِ فکر۔ تمۍ اوس لینفہِ تلے فیصلہ کوٚرمت زِ سہ جیٚیہ نہ راتکۍ پاٹھۍ از تہِ چاے تہ کٲجس کھیٚیہ رازمہن سیتۍ بتہ میوٚنڈ۔ سہ دراو لینفہِ تل نیبر تہ باتھ رومہ منزہ واپس یِتھ زولن گۅڈہ سٹوو پتہ ترٲون رازما أڈ کولۍ کھنڈ پریشرس منز، پریشر کوٚرن بند تہ تھوون سٹووس پیٹھ۔ سٹووس کڈن ہوا دکہ زہ ژور بییہ تہ ووٚتھ ژاو بسترس منز واپس۔ لینف ہیوٚر پہن کھٲرتھ ترووُن لبہِ سیتۍ ڈوٚکھ تہ نظرہ گنجن سٹووچہ نیجہ وۅزجہ ریہہ کن۔ واریاہس کالس مدے گنڈتھ گوٚو تس اچھن منز آب جمع۔ شاید پییہ تس فوطمہ بییہ یاد کِنہ نیچوین دۅن ہنز بے وفایی آیس نظرن برونہہ کنہِ نغمہ لاگنہِ توے تہ گٔیہ شاہ صٲبس بُتھس سژن تہ اچھن ہندۍ ٹٹہ وار کرنۍ کم۔ فوطمہ نہِ مرنہ پیٹھہ ٲس تمۍ پریتھ کُنہِ یہ دپۍ زِ تہِ لوہ کرمژ۔ سہ نہ اوس وۅنۍ اخبار رٹان، نہ اوس شامس ٹی وی تراوان تہ نہ اوس دۅہس آنگنہ کس باغس منز کرسی کڈتھ تاپھے دوان۔ تس یوتام فوطمہ پانس نش ٲس تس نہ اوس نیچوین دۅن ہندِ وطنہ نیبر کماۍ کرنک تہ گھرہ بساونک کانہہ پرواے تہ نہ کُنہِ کورِ ہندِ وٲریو گھرس چھپہِ لگنک غم۔ سہ اوس توتام زانان زِ کور کٔڈ وٲریوِ تہ نیچوۍ زہ سوزۍ نوکری کرنہِ نیبر۔ بنگلہ، جاداد، پینڈ پُرن تہ گھرکۍ سرپرست چھہِ ییتی۔ یعنی پننس ماٹھس پیٹھ تہ یمن سارنے چھیہ ماٹھس سیتۍ تار جوڑتھ۔ مگر ینہ فوطمن اچھ وچہ تنہ گوٚو تس پورہ تسلا زِ یمن تارن گیہ ٹکھ ٹکے۔ ماٹھس رٲو مرکزیت تہ سہ رود چھرا حبیب اللہ شاہ۔

حبیب اللہ شاہ اوس شیہ وری برونہہ ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر سندِ حیثیتہ رٹایر گوٚمت۔ رٹایر گژھنہ کس روۍ یس دورانے میجوو اہندس زٹھس نیچوس بنگلورس منز کمہِ تام مِلہِ طرفہ آرڈر تہ رٹایر گژھنہ پتہ اکھ ؤری گیوس دوٚیم نیچو تہِ جوٚمہ کس ریڈیو سٹیشنس منز لگتھ۔ ترییمہ ورۍ یہ کریوو شاہ صٲبن یمن دۅنونی کھاندر تہ پتہ ژجییہ یم پننہ پننہ آسنہِ ہیتھ پننین پننین جاین واپس۔ شاہ صٲبس ٲس پننۍ آشنۍ فوطمہ پننیو گھرہ کیو بٲژو منزہ ساروے کھوتہ زیادہ ٹٲٹھ تہ تس پتہ پننۍ کینسہ کٔٹ کور کس رٹایر گژھنہ پتہ پینژمہِ ؤرۍ یہ کھاندر کریون۔ یم کامہِ نکھہ وٲلتھ اوس شاہ صٲب شبابس منز یِتھ فوطمس سیتۍ پنن بجر چھاوان۔ فوطمہ تہِ ٲس بے وایہ پاٹھۍ پنن سورے وجود شاہ صٲبس آیہ تن تھاوان۔ تس نہ ٲس وۅنۍ شرۍ زینچ فکر نہ شرین ہنزِ موجودگی کنۍ شاہ صٲبس سیتۍ لول بٲگرنس منز تھۅتھ گژھنک کانہہ خوف۔ تس اوس زہ تریہہ وری برونہہ پیٹھہ بلڈ پریشر کنۍ مارۍ مندۍ شریرس ہنا مۅچر ہیو پیدہ گومت تہ شاہ صٲبس ٲس امہ مۅچرہ کنۍ سۅ زیادے خۅش کران۔ سہ ییلہ زانہہ گھرِ نیبر کھور تراوِ ہے واپس اژونے ٲس تس فوطمہ پرژھان "دوٚپمے یمہ بلڈ پِلہ ما انیتھ اورہ؟”

تہ شاہ صٲب اوس ژٹونے ونان۔ "متہ آستہ یہ دوا دوا کران۔ سنس تراوتہ نون کم تہ رۅہنہ پھلۍ ہنا ژٔر پہن۔ پانے گژھہِ بلڈ تہِ ٹھیک۔” شاہ صٲبن اوس تس کرتام ؤنتھ تھوومت زِ سنس رۅہن تراونہ سیتۍ چھہ خون تنان تہ بلڈ پریشرک چھہ نہ خطرے روزان۔

پریشر ککرن یُتھے گۅڈنچ چخ دژ، شاہ صٲب گوٚو زنتہ مژِ نندرِ ہشیار۔ تمۍ یوٚژھ زِ تراوہ نا بہ تہِ سنس رۅہنہ پھلۍ ہنا۔ سہ دراو لینفہِ تل نیبر۔ پریشر وولن پتھر۔ مصالحہ ڈبہ منزہ کٔڈن رۅہنہ پھلۍ زہ۔ سٹووس کٔرن ریہہ کم۔ پریشرس کوٚڈن سورے ہوا۔ ڈکنہ تھوون پتھر۔ شراپچہ سیتۍ لٲگن رۅہنس زہ پھلۍ زلنۍ۔ زلان زلان ووٚتھ تس کھوورِ اتھہ چہ اونگجہ کھش۔ تس آیہ رتہ اوٚنگج بٔرتھ۔ رۅہنس زہ پھلۍ دِتن پریشرس منز دٲرتھ۔ المارِ مژروون دروازہ۔ فوطمن کھاسہ وچھن میٹ کٔرتھ شلفس پیٹھ۔ کھاسہ کوٚڈن نیبر۔ امہ چہ لونچہ نیٹھہ تہ اوٚنگجہ سیتۍ تھپھ کٔرتھ دِژن نرِ دنن، کھاسہ آو مژرنہ۔ اتھ ٲسۍ واریاہن جاین گدۍ گمتۍ۔ اکہ اندہ ژٔٹنس اکھ زیٹھ تر۔ سۅ پننہِ اوٚنگجہ پیٹھ تھٔوتھ تہ وارس پیٹھ وار کھٲلتھ تروون دچھنہ اتھہ تہ دندو سیتۍ اتھ گنڈ۔ گنڈ ترٲوتھ باسیوو زِ تس توٚگ نہ چیرہ گنڈ تراون۔ تس بییہ فوطمہ، نیچوۍ زہ تہ کور زنتہ گۅڈنچہ لٹہِ یاد۔ سٹووس ہوا دکہ زہ ژور دِتھ تہ پریشر نوِ سرہ اتھ پیٹھ تھٲوتھ ژاو سہ بییہ لینفہِ تل۔ لینفہِ تل اژتھ پییہ تس تتھ ساین بورڈس کن نظر یتھ پیٹھ ویٹھیو انگریزۍ اچھرو لیکھتھ اوس Habibullah Shah تہ یس تمۍ فوطمنہِ مرنہ پتہ زہ ژور دۅہ نیبرمہِ گیٹہ پیٹھہ تُلتھ نمت اوس۔ ساین بورڈس اوس تلک پیٹھ کٔرتھ زنتہ شاہ صٲبنۍ پاٹھۍ دارِ سیخس سیتۍ ڈوٚکھ ترٲوتھ۔ شاہ صٲبس پیوٚو یاد ۔۔۔ از برونہہ پنداہ ؤری لاجیوو میہ یہ بورڈ نیبرہ کنہِ گیٹس پیٹھ ییلہ بہ ہیڈ ماسٹر اوسس۔ ہیڈ ماسٹری ہندین تمن دۅہن تہِ کوتاہ خۅش اوسس بہ مگر تمو جہنم گار لڑکو کریوو خواہ مخواہ سکلولس منز ماحول خراب ییلہ دۅن وٲژن پیٹھ ایکسکرشن گژھنہ خاطرہ میہ تمن اجازت دژوو نہ۔ تم ٲسۍ پتہ ژورہ ژھیپہِ سکول آنگنس منز لہر تراوان۔ "جبۍ بلہس پییہ خانس ترٹھ وۅگہ مرِ کنۍ، وۅگہ مرِ کنۍ تہ دۅدہ ژڈِ کنۍ” تہ بہ اوسس پننس آفسس منز تھوٚد ؤتھتھ ترۅیو تہ ژرنیو کنۍ کن دوان تہ یمہ لہرہ بوزان۔ "جبۍ بلہس پییہ خانس ترٹھ وۅگہ مرِ کنۍ، وۅگہ مرِ کنۍ تہ دۅدہ ژڈِ کنۍ”۔

شاہ صٲبن تجہ نظرہ ہیوٚر کن تہ تالوس سیہ منزس وچھن دزونیو تارو ورٲے بجلی بتۍ اویزان۔ تمۍ تھوِ نظرہ واریاہس کالس یتھے کنۍ۔ شاید یہ زٲنتھ زِ سہ وچھہِ زِ اورہ کتھہ کنۍ چھیہ ترٹھ وسان تہ ییلہ پریشر ککرس پوٚتس پتھ زہ چکہ نیرتھ ژجہ، شاہ صٲب زنتہ گوٚو مژِ نندرِ ہشیار۔ تمۍ کوٚر سٹوو ژھیتہ۔ پریشر وولن پتھر تہ لینفہِ تل اژتھ لٲجن ماے۔ شامس ییلہ سہ پزۍ پاٹھۍ مژِ نندرِ ہشیار گوٚو تس گوٚو یہ زٲنتھ سیٹھا افسوس زِ از پییہ تس راتکۍ پاٹھۍ کاجک بتہ کالچن کھیوٚن تہ دۅہلہِ نندر کرنہ کنۍ راتس تارکھ گنزران روزُن۔

زمرے:افسانہ

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s