شاعری

ستھ غزل – رفیق ہمراز


1

سانہِ گامک سہ بازۍ گارا
ٲنہ اندری کران دوتارا

جود کیا چھے ژیہ جودگارا
گو٘و قرار آو بے قرارا

شوقہ ہاریۍ میہ ہارِ کرتام
وۅنۍ چھہِ چھتلا تہ بانٹہ زارا

مامہ ٹاٹھنۍ سۅ گوجہ دٔج ہیتھ
خوابۍ ڈیونٹھم میہ لۅکچارا

جانوارو تہِ لوگ چرۍ گیش
یور کُن ما چھہ تس اشارا

شہہ کھسُن بار ٲخرت زن
وۅتھ سا پانا یہ مٹہِ چھیہ کھارا
__

2

سلیمانی حکم اسمانۍ یکھنا
بہت تختس صبا مہرانۍ یکھنا

چھیہ کیا تھپہ تھپھ یہ لجمژ بادشاہن
بہ وچھہ ہے خوابۍ رۅے کوٹہ رانۍ یکھنا

ہیلن چھیکھ یا کلوپترا، زلیخا
مصرۍ یکھ یا ژہ یکھ یونانۍ یکھنا

میہ بوزم باغ ژایکھ راتھ شامن
جہانگیرس مۅژییم دانۍ یکھنا

میہ سیتین راورٲوتھ یم تہِ ساتھا
لٔبتھ واپس بٔنتھ انزانۍ یکھنا

بہ پارد چھس ژہ زانکھ میانۍ فطرت
قرارچ چھکھ ژہ کنۍ پدمانۍ یکھنا
__

3

کہہ چھہ پاسس زادگی ہیتھ کتھ لگکھ
ٲنہ چھے در ٲنہ ژھاین کیا کرکھ

پتھ پرستانس چھیہ کریکھ ینہ بیقلکھ
ساز بوزکھ واوہ گراین گٔیڈ گنڈکھ

ہو تہ اللہ ہو چھہ وردک اوبروے
ہو أتی ورتکھ تہ توشس کیا تھوکھ

آسنچ نا آسنچ گانگل ژلی
دل بہ دل دامانہ یخلاصک رٹکھ

ہلہ شیری اکھ تہ سٲری کھرۍ ژلن
مۅٹھ چھیہ مۅٹھ وٹھ کاہ دپان گو٘و اکھ تہ کھ
__

4

دل چھہ تنبلان مگر چھہ سنبلان ولۍ
زنتہ زا شر ژلاں چھہ پھرستن ژھلۍ

تھوتہ ساتھا قدم بہ ونہے کتھ
کتھ چھیہ چٲنی اما چھیہ میٲنی سلۍ

اتھ سوالس جواب پانے ون
ژانگہِ آیوس بانگہِ کو٘ڈنس ولۍ

لولہ ہانکل کرنۍ تہ تھاوُن بند
میانہِ قولے چھہ لول پرٲٹتھ دلۍ

وۅتھ گژھو اسۍ تہِ شالمارن کُن
سونتہ واون سندارۍ متۍ ہلۍ کلۍ
__

5

تو٘تاں یتین تھاونۍ زتنۍ چھیہ کاٹھس پیٹھ
کمے چھہ دور اما پکن چھہ آبس پیٹھ

سہ دارِ پنجرہ ژہ وۅنۍ دۅہے وو٘تھے تھاوکھ
وچھکھ نصف رٲژن تہِ ٲنہ خانس پیٹھ

نبس تہِ تیہنییہ تن ڈلس اچھس وۅزجار
وُپھل سہ کوتر ما چھہ نارہ بالس پیٹھ

نہ گردِ آش اچھن نہ وونٹہ گٲنٹی ستھ
سیکیل چھہ کاڈ کڈتھ تہ سرۍیہ دارس پیٹھ

تھپل چھہ جونٹہ دوان نوان تہ تھاواں دگ
بلی چھیہ وٲنس گژھان بایہ لالس پیٹھ
__

6

سفر چھہ لانہِ لیکھتھ نظر چھیہ گردِ الٲنز
قدم چھہ راسۍ لگے پکن چھہ اللہ ہو

ہو٘ندر چھہ معنہِ رٹتھ تہ سرۍ یہ روے کھٹتھ
سو٘در چھہ حبسہ دمس زِپن چھہ اللہ ہو

رٹن چھہ من صلوا کھسن چھہ طورس پیٹھ
زژن چھہ معنہِ ونن کلُن چھہ اللہ ہو

تھٔوتھ تہ روزے کتھ وو٘نتھ تہ سر گو٘و فاش
گچر چھہ سونچہ پدین سرن چھہ اللہ ہو

شہر چھہ ژھاین تل تہ لوکھ پھٹجہ گنڈتھ
وو٘تھن چھہ اللہ ہو بہن چھہ اللہ ہو

وبالۍ واوہ رنگا یوان تہ ہیاوان شہہ
شمالۍ دارِ ژٹِو لسن چھہ اللہ ہو
__

7

یہ آمہ تاوک اثر چھہ باسان پھہان چھہ سورے وجود میونے
چھہ بالہ دامنۍ تہِ نار ہ موکلۍ ژہتھ نمت سو٘درہ کاڈ سورے

سہ سونتہ کالک ہو نوا ہیو میہ راتھ باسیوو بہت دریچس
کتج تہِ باسیۍ گیوان ژیہ زن یمبر زلن زن خمار چونے

بہ چون اوسس دۅہے اما ژیۍ تھٔوِتھ تہ پٲلتھ رقیب لولس
کنی کٔرتھ رب تہ سب حیاتس جہات منستھ رو٘چھتھ نہ قولے

خیال چھۅنۍ چھۅنۍ تہ دیدمان شرۅنۍ یہ ساز شوقس وبالۍ کروُن
میہ پوش پھۅلنس تہِ کن دژایم تہ شوقہ اندر سبھایہ شانکے

وچھس تلے تتھ کتابہِ اندر تھویوتھ رژھرتھ سہ میون پرتو
نظر کٔرتھ از تہِ شش جہاتن یہ پان باسان میہ خانہ مولے

زمرے:شاعری

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s