افسانہ

نوٚو تٲریخ (افسانہ) — شکیل الرحمن


صدیق کیاہ کٲم کار اوس دوہس کران اتھ ٲسۍ نہ عام لُکھ وٲقف ، تکیازِ یہ اوس پریتھ وزِ گری آسان۔ صدیقس یُس روزُن کیُت مکانہ اوس تتھ ٲسۍسڑکہ اندہ کینہہ دُکان تہ تِمن پیٹھہ کنۍ کینہہ کمرہ کرایہ کشی پیٹھ۔لہاذا اوس یہ عیان زِ صدیقس چھینہ پونسہ رٔنگۍ تنگی۔ یہ اوس پنژاہ پانژونزاہ وٲنسہ۔ زنانہ ٲسس ترہ دۅیترہ ؤرِش پھنڈ ر ہش، تہ زہ دۅدہ گگر ہی شُرۍ۔بوزنہ کِنۍاوس أمس یہِ ترے یم خاندر۔ گۅڈنچ زنانہ چھس ہانٹھ ٲسمژ۔ اصلیت ٲس نہ کٲنسہِ پےَ تکیازِ ییلہ یہ صٔدرہ بل پیٹھہ یور آو أمس ٲسۍ شُرۍ بیترہ سیتۍ۔ صد پٔری سیتۍ اوس یہ جلد اتھہِ یوان۔ یہ لقب اوس أمس برونہے صٔدرہ بلہ پیٹھہ یور آمُت۔ صد پٔری بوزتھ اوس أمس نیبرۍ شرارتھ کھسان مگر أند رۍ اوس خۅش گژھان۔ تکیازِ یہ اوس پریتھ وِزِپھران زِ أمس آسہ خوبصورت أچھۍ یمہ کِنۍ أمس پٔری عاشق گےٚ۔ أمۍ پھٹرو تسُند دل تہ گوٚو بیمار، شُتلۍ نیرنہ کِنۍ گٔیس اکھ أچھ نوتوان مگر بُتھس رودُس نہ کانہہ تہِ آکھ۔ یمن دۅہن ٲس شُتلۍ بیمٲرۍ کٔشیرِ منز عام ، یلاج نہ آسنہ کنۍ ٲسۍ عام طور شُر ۍ یاتہ کھۅڈ زد گژھان نے تہ مران۔لُکھ تہِ ٲسۍ نہ یہِ بیمٲرۍ گر گر پھیلاونس کانہہ کسر باقے تھاوان۔شُتلۍ نیرنس سیتی ٲسۍ دۅدہ وُگربنٲوتھ گرہ گرہ توٚبرُکن مرضِ مُبارکس ٲسہ تھوٚپ سوزان۔ یتھ کٔنۍٲسۍ امکۍ جٔرم (germ) دۅدہ وُگرہ سیتۍ آرام سان گرہ گرہ واتان۔ خٲر کتھ چھیہ صد پٔری سنز ۔أسۍ پکناوَو یہے کتھ برونہہ۔

ہمساین سیتۍ لۅیۍ خۅیۍ نہَ آسنہ کنۍ ٲسۍ نہ ہمسایہ أمس أنزۍ مٔنزۍ نے ٲس أمس سیتۍ کٲنسہ دلچسپی تکیازِ یہ زانہِ ہا نہ کٲنسہ سلام تہِ کر نۍ۔ ژکہ اوس أمس وہمہ زِلۅکٹ زنانہ آسنہ کنۍما لگیم جوانن ہُند یُن گژھُن۔کرایہ دار ٲسۍ أمس صرف گۅرکہ دۅہ بُتھ وُچھان۔ یس نہ امہ دۅہ کرایہ آسہا تس اوس اکے مۅحلت دِوان۔ أمۍ سُند ونُن اوس کرایہ ییٚلہ پُھٹہ یہ چھہ دِنہ وٲلس گۅبان تہ پتہ چھہ سہُ ژلنس پیٹھ مجبور گژھان۔ امی اوس یہ أچھۍ پھرتھ کرایہ وگراونہ نیران۔

سبحان نٲوِد اوس وٲحد دُکانداریُس أمۍ سندِ یہ مکانہ ہینہ برونہہ تہِ أتھۍ دکانس بیہان اوس۔ یہ اوس صدس اصلاح بیترہ مُفت کران۔باقی سٲری پرٲنۍ دکاندار ٲسۍ أمۍ عدالتکہ زور کٔڈتھ نٔوۍ أنۍ متۍ۔ عام طور چھ یتھۍ لُکھ گۅڈے کانہہ نتہ کانہہ نۅکتہ کرایہ درس تھاوان یُتھ عدالتک سہارہ نتھ آ سٲنی سان کڈنہ ییہ۔ قونون چھُ قونون، یُس پریتھ انسانس زوٗنہِ ہندۍ پٲٹھۍ سیتۍ ستیۍ پکان چھُ خواہ سہُ صٲد ٲسۍ تن یا ژوٗر۔
صد اوس منز ۍ منزۍ چوک کھسان۔ امہ دۅہ اوس سہُ اجی میٚنگہ تھٔز قرا قُلی ، کرہنۍ صد رۍ تہ سفیدکُرتہ یزار لٲ گتِھ اتھس کیتھ ڈبل پیکیٹ سگریٹ ڈٔبۍ تہ ماچس تُلان۔ سہُ کیاہ چھُ چوک کھٔستھ کران اتھ اوس نہ کانہہ سِر۔

گُلہ حٲجۍاوس بوٚڈمۅہنیو، مُدبر، غریب پرور، أمس ٲسۍ لۅکٹۍ کیٚو بٔڈۍ گلہ مام ونان۔ گُلہ ما منۍ بوٗنۍ تہ سبیل گاہ ٲس اتہِ مشہور۔ زارین تہ شرابین ٲس أمۍ سنز بڈ تھۅتھ گژھان تم ٲسۍعام تور امہِ علاقہ نیبرڈفر لاگان۔ امہِ کنۍاوس نہ سہُ کھنز ہیٚور واتان یُس واتُن گوٚژھ۔
گلہ مام بوٚرُت بار آسنہ باوجوداوس تمہ وِزِ کوٚل گژھان ییلہ تس پولیس کیسس متعلق پرژھہاو۔ محلہ والین ٲس پے زِ یہ کیس چھیہ اکھ سٲزش یس أمس خلاف بڈیو زاریو کینژن پولیس والین سیتۍ رٔلتھ کٔر۔ مگرپولیسس کُس کیاہ کرہا۔

کتھ ٲس یہِ زِ گلہ حٲجس اوس تریہ ؤری برونہہ اکہِ زنانہ کیس کوٚرمُت زِ أمۍ کرے میہ سیتۍ زبر دستی۔ دپان یہ ٲس نہ سیٚود زنانہ یہِ ٲس پتہ وتے داغدار۔ تس اوس وننہ آمُت زِ گلہ حٲجس ہرگاہ ہانژھ لاگو سہُ دیہ تہِ کینژھا ٲسہ تھوٚپ یہ تس منگنہ ییہ تہِ دیہِ، تکیازِ عزت دار تہ مالدار چھہ۔مگر گلہ حٲجۍ اوس زِٹھین سیتۍ مشور ہ کٔرتھ یہ کیس عدالتس منز لڑنُک فیصلہ کوٚرمُت۔یی سوٗچُتھ زِ ہرگاہ سہُ أمس ٲسہ تھوٚپ دیہ اکھ کر ہان لُکھ أمس پیٹھ شکھ بیٚے آسہا سہَ دۅہے أمس باج ہیٚوان۔ یتھین موالین لگہِ ہا ہوا تہ

یُتھ قصہ ہیٚکہا پونسو موٗجوب کٲنسہ سیتۍ تہ دُبار ہ کرنہ یتھ۔

ججن اوس پٔتمہِ پیشی پیٹھ گواہ پیش کرنُک ٲخری موقعہ دتمُت۔ گلہ حٲجۍ اوس بشایہ جم عدالت چین ہیرن کھسان تہ کیازِ تس اوس یقین کانہہ اپُز گواہ سپدنہ پیش۔ یتھۍ گواہ چھ کاغذی گواہ آسان۔ بُلاونس سیتی گوٚو یہ ملزمن ہندس کٹھکرس منز کھڑا۔ أمۍ دِژ دٔچھنۍ کھوو رۍ نظر سہ زنانہ ٲس نہ کُنی ، ججن دیُت سرکٲرۍ وکیلس گواہ حٲضر کرنک حکُم دیت ، یتھےُ سفید پلون منز اکی میٚنگہ قراقُلی ٹوٗپۍ دِتھ نفر حٲضر سپُد گلہ حٲجس گوٚو اکہ رنگہ بیاکھ رنگ۔ حلف تلتھ کٔر سرکٲرۍ وکیلن أمس سوال پرژھنۍ شروع۔ گُلہ حٲجۍ گوٚو ترین تہ تروہن ییٚلہ أمۍ پنُن ناو صدیق تہ گلہ حاجُن ہمسایہ ووٚن تہ پتہ دتُن چشم دید گواہ سُند بیان۔ بیان قلمبند سپدتھ ووٚتھ جج زن نیندرِ ۔

گُلہ حٲجۍ کوٚڈ گر وٲتتھے صِدُن پے پتاہ۔ تس اوس وکیلن ووٚنمُت صد چھُ professional گواہ۔ بہتر چھُ یہ سمجھاوُن تہ کُنہ طریقہ جرہ وِزِ نرمی تراوناوُن، تہِ کیازِ یہ گوٲہی چھ مٔنزۍ سیٚود تہ

گژھان۔ یۅدوے عام طورگواہ ناوکۍ چشم دید چھِ آسان، وۅنۍ گوٚو یم گواہ چھِ منزۍ پَزین گواہن ہندِ کھۅتہ تہ پٔزۍ ثٲبت سپدان۔ گلہ حٲجۍ بوٗز اَتی زِ صِدن چھ یہ زنانہ عدالتہ منزے أکس نش مۅکلٲوتھ پانس نیتھرۍ کٔر مژ ۔اتھ کیسس تہِ أس أمی اپز گوٲہی دِژمژ۔ گُلہ حٲجس اوس فکرِ توٚرمُت زِ عدالت ہیٚکہ نہ کٲنسہ تہ گوٲہی دِنہ نش رُکٲوتھ، جرہ چھ امی یوان کرنہ۔ یُس گواہ نہ جرہن تل پھُٹہِ سہُ چھُ پوٚز گواہ ماننہ یوان۔
شام نیماز پتہ تُلۍ گُلہ حٲجۍ اکھ ز زٹھۍ پانس سیتۍتہ ژاو صِدُن گر۔ صدن کوٚر یمن بڈ آو بھگت یم آسہ ہان گۅڈنِکۍ پٔژھۍ یمو أمۍ سندِگرِ چایے چیٚے۔ چایے چیوان ووٚن گُلہ حٲجۍ صدس رسمن میہ أس نہ پے تُہۍ چھو میہ ہمسایہ۔ صدن اوس یہ ؤنتھ بولڈ کوٚرمت ز پے گژھ تھاوُن تہِ کیاز اسلامن چھُ ہمسایہ سُند س حقس اکھ اعلیٰ مقام دِیتمت۔ ویسے اوس امہ کتھ سیتۍ گلہ حٲجس تہ تسندین سٲتھین زِ یہ چھُ ہمسایہ پرست۔ مگر ییٚلہ یمو أمس اور ینُک وجہہ ووٚن تہ اتھ

کیسس متعلق زان دِژ ۔ صدن کوٚر امہ کتھ ہُند بڈ افسوس زِ یُتھ بُزرگ چھُ اپزس کیسس منز ہینہ آمُت۔ مگر سیتی کوٚرُن یہ انکشاف زِ گوٲہی دیُن چھ أمۍ سُندپیشہ تہ یہ چھُ پیشہ ایماندٲری سان نباوان۔ یم گےٚ ترشوے ہےَ بُنگہ ہی روزِتھ۔

زمرے:افسانہ

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s