شاعری

زہ نظمہ — شفیع شوق


شفیع شوق

گۅلاب روے، سبز وُڈنہِ

تُلہ کُلِس تل ٹینہ چھپرس تل بہتھ اتھ کنہِ دٔسۍ دٔسۍ کیاہ لبکھ؟
ٹِکر ژھیوٚن ہیتھ کنہِ منزونِرکھ ژہ تنہِ ہندۍ سنۍ وۅگنۍ!
کسب نے چھُے کیازِ چھُکھ بٔلۍ زو ژٹان
ہنہِ ہنہِ سوران ہیکتھے بنہِ کیاہ اتھ !
کار نے رودے تہ پتھ ما گوٚو ژہ روزکھ پرایہ یتھ کنۍ !
پکھ زبرون پارکہ منز
وُچھ چھِہ کتھہ کنۍ لُکھ زوان
کٲنسہِ ما ہیوٚتمت ، ہیوٚتُتھ یتھہ کنۍ ژیہ بلۍ
یس کرُن یہ آسہِ کرۍتن، اسہِ کیاہ؟
وۅتھ تہ ژھن زنگارہ ترٲوتھ۔۔۔‘‘

زبرون پارک ، پھوٚلِتھ آمت شہر
یس یہ حٲصل، تتھ چھہ شوبان ہاو باو
شوبنچ تہ لوبنچ بر بُکہ ژھٹھ
’’ہا گُلو تۅہہ ما سٲ وچھون یار میون۔۔۔‘‘
گیونہ چھُکھ گیونُے،گیوان منز باگ یم

“رٹھ چپل، تہ پٔرس ، اتھ منز فون چھُے
بینچ چھُے یکیاہ مۅکُل، تامتھ ژہ اتھ پیٹھ ڈاپھ تراو
دگ ژلی ۔۔۔ حِس تھٲوۍزِ، ینہ زۅل پیی!
نرم درمنس پیٹھ بہ نِمہ ہا دور ہش‘‘

ییلہ نہ وۅنۍ پوٚت کل کہنۍ
کانہہ تہِ صورت کہروبا نہ
آلوہس سۅکھ پنُن ، ناوِ ولہِ ہے آولن
وگنہِ ونوُن کانہہ نہ،کانہہ گرایُن نہ کانہہ
ناگہاں سونٲمۍ ، تہ زوۍ بے نشاں
بال کانہہ چھُہ نہ برونٹھ کُن، کانہہ آرہ پَل ڈُلوُن نہ تیتٲلِس کُنتھ
رود پتھ کُن لیُتھ کٔرتھ للہ وُن دماغس :
زیٖٹھۍ آلو، چِرۍ گیشاہ، کھنگا لہ، ودہ ود، گٍنگرایہ، خیر پاٹھ، بییہِ۔۔۔
دور کتہِ تاں تھارِ ہوٚت اکھ آرہ وَہوُن، لارہ وُن بے باش گرز

بہ، بہ اکھ۔۔۔ یہ ، بیاکھ،
کرتامتھ سمکھۍ، پکۍسیتۍ سیتۍ
دۅن دشاین ہندۍ مسٲفر، اکھ أکس ہمراہ بٔنتھ
اکھ أکس نکھہ ڈکھ ، أکس اکھ شانکونۍ
اکھ أکس دٔر تھپھ ژھنتھ ،اکھ أکس شہہ رگ بٔنتھ
نے یمنے نے یسارے
ییلہ تہِ یوٚژھ ادہ کھورِ روٚستے ناو تٲر
بس یہے اکھ ستھ،
بس یہے اٹہ بور، مٹہِ اکھ
___

متۍ بٲندۍ وانہ مۅکلِتھ
(شاعری روٚس نظمہ)

وۅرسہ
یمن نہ درالژ ، پھیٖرۍ کٔرِتھ کینہہ پوریوٚو
ماجہ کشیرِ متیمتۍ تھٲنگۍ
وۅسہ آمتۍ ارچٲکۍ
بریشیمژہ پھتہ پھیارِ
“ماجہِ زبٲنۍ” کران خدمت

کۅکٕر کِنہ ٹھول
لفظ چھہ اول !
معنی اول!
ٹۅگجن ٹھۅلہ ٹھۅل
نہ چھہ وۅنۍ لفظے، نہ چھہ وۅنۍ معنی
کوکریو ٹھولے تراونۍ ترٲوۍ

ارتقا
تِمہ شِنہ میچہ ہشہ شلہ پدمانہِ
عصمتہ وسمتہ حشمت کیا!
از تِمہ پننٮن کرانٮن آپہ
پننٮن رانٮن کِژھہ کھُرۍ کۅنڈلہ
گواہس منز کٲشُر
گوا کرو سیمنار تہ وچھتو
کٲشُر کلچر وُپھناوَو!
نُند کیموشُن کٲشر أسۍ بازیاب کرون
بجٹ گٔژھتھ منظور چھہ برونٹھے

تگنو!
ژہ نہ حض کرنے کینہہ
بس ہیتھے چھِو کٲم کران!
تلہ حض کر کینہہ
ہُمو وچھِو ادہ کیاہ کیاہ کوٚر
کوتاہ پروو
چھُے نہ کرُن کینہہ
تی ون
وَس حض بۅن !

لیُتھ
یمۍ سنزِ کۅلیہِ ہمۍ سنزِ کۅلیہِ نش کٔر تٔمۍ سنزِ کۅلیہِ ہنز غیبت
یمۍ سند رون چھہ تٔمۍ سندِ دفتر نیٖرتھ
تٔمۍ سند گرہ پوٚت برہ سٮدان
تمہِ ووٚن راتھے ہمۍ سنزِ کۅلیہِ
یمۍ سندۍ فرزندن دِژ تٔمۍ سنزِ کورِ
کالیج گژھوُن
بارکہِ ژھایہ گٔژھتھ ‘آے پِل’

سریہہ
شییہِ رٮتۍ آیم خدمت کرنہِ !
تٍر چھیہ، ییتہِ بہ کتھ کتھ واتس؟
بُجرس کیاہ کرہ؟
دارابؔ صٲبا! نیٖرو
نیٖزٮن یوٚت یوٚت دل نیرٮس ، نیٖزٮن
وُنہِ چھُس یاون
ٹِکٹہ تہ اے ٹی ایم تہ کارڈ میہ تھوومس پرسس منز
سَخ نازک مزاج چھیہ میڈم، میہ چھہ امۍ سند سریہہ کرہ کیاہ
” ماہِ نوکۍ” کینہہ نایاب شمارہ
تھوۍ مو بیگس منز
تتہِ کس زانہِ غزل ؟ کُس کٔمۍ سند
محکمہ چھُم مٹہِ
کیاہ کرہ
میہ چھِہ ییتہِ انزراونۍ واراہ کار

بے چھس ، میہ چھہ
بُڈہ کچہ لِس تھنہِ میچہ ہند مٲل
ژھنۍ تن یہ تہِ کٕیہ اتھہ ، وٹۍ تن
وسہِ بۅن پانس ، بتہ، کھسہ ہیوٚر
وۅکھشُن اتھ لیجہِ کتیو کوٚر
ادہ تِم کتہِ تہ بہ کوٚت وٲژس
کینہہ میژِ شرپۍ تہ کینہہ میژِ مونۍ
بے چھَس بے، وارے ،
بے چھَس، میہ چھہ

دعا
یا جبّار ! یا قہار ! ۔۔۔یا رحیم ! یا رحمان!
یا ستّار ! یا غفّار ! ۔۔۔اسہِ کر برکت !
دشمن سٲنۍ کرُکھ برباد !

نجاتہ برۅنہہ
ہنہِ ہنہِ ہموُن تنہ وُن شور
پوٚد پوٚد نکھہ بے ٲنتھ ژھۅپن کُن
گٹہِ پھوٚٹمت و ٚوٹ گٹہ کوٚٹ گٹہِ و ٚوٹ

خطِ آزادی
یُس نہ چھُیی
تمہِ پگہکہِ سٲنکتہِ
ہینہ آمتۍ
ژیہ نہ راہ ، میہ نہ راہ
بٲندِس خطِ آزٲدی
ییتہِ یور نہ برم

زمرے:شاعری

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s